لینن کی وفات

تحریر: کامریڈ ٹراٹسکی کامریڈ لیون ٹراٹسکی کے 76 ویں یوم شہادت پر کامریڈ کی سوانح عمری “میری زندگی” (My Life) سے ایک اقتباس جو تاریخی حقائق پر مبنی ہے۔ اپنے پڑھنے والے ساتھیوں کے نام امید ہے وہ اپنی جدوجہد کی ان انقلابیوں کی طرح مرتے دم تک جاری رکھیں گے۔  انتخاب:  کامریڈ متین آصف  مجھ سے پوچھا جاتا اور اب بھی پوچھا جاتا ہے۔ ’’تم اقتدار سے کیسے محروم ہوئے؟‘‘بہت سی صورتوں میں یہ سوال بڑا سادہ اور معصوم لگتا ہے۔ جیسے کوئی سیال یا مادی چیز ہاتھ سے پھسل گئی ہو۔ پانی یا کوئی کتاب ہاتھ سے نکل گئے ہوں۔ بات یہ ہے کہ طاقت ایک آنی جانی چیز ہے۔ اسے کسی مرحلے پر کھونا بھی ہوتا ہے۔ پرامن طریقے سے یادوسری طرح۔ یعنی انقلابی حلقے میں نظریات کے انحطاط کی وجہ سے، یا پھر عوام کا انقلابی مزاج بدل جانے سے۔ یہ دونوں چیزیں بیک وقت بھی … Read more

آزادی کے زخم

تحریر: کامریڈ الطاف بشارت 14اگست 1947کو رات 12:02 منٹ پر پاکستان کا جاگیر دار – سرمایہ دار(جو چوری اور ڈاکہ زنی سے جاگیردار اور سرمایہ دار بنا یا اپنے سامراجی آقاؤں کی دلالی کے انعام کی صورت میں) ، وحشی ملاں، جاہل پنڈت ، قومی و نسلی عصبیت کے جن ، ہندوستان کے بنیاد پرست ہندوبنیے ، وڈیرے، پروہیت ، ساہوکاراور تاجر تو آزاد ہو گئے تھے۔ مگر دونوں اطراف کا عام آدمی، مزدور، کسان ، دیہاڑی دار،ریڑھی بان ، طالب علم، بحیثیت مجموعہ محنت کش طبقہ ، غربت ، نفرت ، جہالت، تعصب ، بربریت، حوانیت و سفاکیت کی بھینٹ چڑھ گیا۔درحقیقت زمین کے گرد باڑ لگانے سے سماج کے طاقتورطبقات تو آزاد ہو جاتے ہیں اور پھر وہ شعوری بدمعاشی کے ذریعے جھوٹ ، فریب دھونس ، ظلم و جبر کا سہارہ لے کر اپنے غلاموں کو آمادہ کرتے ہیں کہ وہ اپنی غلامی کے تصور کو ذہن سے … Read more

خاندان

اقتباس “خاندان، ذاتی ملکیت اور ریاست کا آغآز”   مصنف:      فریڈرک اینگلز  مارگن نے اپنی زندگی کا بڑا حصہ ایروکواس لوگوں میں گزارا، جو آج بھی ریاست نےو یارک میں رہتے ہیں۔ انہیں کے ایک قبیلے (سینیکا)نے اسے اپنا لیا تھا۔ مارگن نے ایک عجیب و غریب چیز یہ دیکھی کہ ان لوگوں میں قرابت داری کا جو نظام قائم ہے اس میں اور ان کے اصلی خاندانی تعلقات میں تضاد ہے۔ ان میں عام طور پر یہ رواج تھا کہ ایک ایک جوڑا آپس میں شادی کرتا تھا اور فرقین میں سے کوئی بھی آسانی کے ساتھ اس رشتے کو توڑ سکتا تھا۔ مارگن اس کو “جوڑا خاندان” کہتا تھا۔ ایسے شادی شدہ جوڑے کی اولاد کو سبھی جانتے اور مانتے تھے اور کسی کو اس میں شبہ نہیں ہو سکتا تھا کہ باپ ، ماں ، بیٹا ، بیٹی ، بھائی اور بہن کس کو کہا … Read more

تہذیب کے ما قبل تاریخی دور

کتاب “خاندان ذاتی ملکیت اور ریاست کا آغاز”۔ مصنف :    فریڈرک اینگلز اقتباس مارگن پہلا شخص ہے جس نے ماہر جن کی گہری واقفےت کے ساتھ انسان کے ماقبل تاریخی دور میں ایک  مخصوص نظم و ترتیب پیدا کرنے کی کوشش کی۔ سوائے اس صورت کے جبکہ مزید اہم مواد ملنے کی وجہ سےتبدیلیاں کرنا ضروری ہو جائے، امید کی جا سکتی ہے کہ اس نے جو درجہ بندی کے ہے وہ قائم رہے گی۔ عہد وحشت، عہد بربریت اور عہد تہذیب ، ان تین خاص ادوار میں قدرتاً مارگن کا تعلق محض پہلے دو سے اور اس عبوری دور سے ہے جو تےسرے عہد کی طرف لے جاتا ہے۔ ان دو عہدوں میں سے ہر عہد کو وہ ذرائع زندگی کی پیداوار کی نشوونما کے مطابق ابتدائی، درمیانی اور آخری ادوار میں تقسیم کرتا ہے کیونکہ جیسا کہ مارگن کا کہنا ہےکہ:   “عالم فطرت پر انسان کی ساری برتری کا … Read more

انسانی سماج کی تنظیم و ترقی

تحریر: انقلابی جدوجہد  انسانی سماج کی تشکیل محض کسی حادثے کا نتیجہ نہیں ہے بلکہ بنی نوع انسان نے ایک مسلسل عمل ، مشترکہ جدوجہد ، اجتماعی تجربات اور ٹھوس مادی و معاشی بنیادیں فراہم کرتے ہوئے ایک لمبے تاریخی سفر کے ذریعےیہاں لا کھڑا کیا ہے ۔ انسانی سماج نے جہاں ترقی کی بہت ساری منازل طے کی ہیں وہاں پر انسانی ارتقاء کے بہت سارے مدارج بھی طے کئے ہیں۔ انسان کا اپنے پاؤں پر کھڑا ہو کر اپنے ہاتھوں کو آزاد کر لینا ، انسانی ترقی کی اس معراج تک پہنچنے کے لیے انسانی ہاتھ کی ساخت اور محنت جس نے بعد میں انسانی ذہن کو جلا بخشی اور اس کی جسمانی کمزوری کا بہت بڑا عمل دخل ہے ۔ اگر ہم پتھر کے ابتدائی دور کے آلات دیکھیں اور پھر مختلف انسانی تہذیبوں کی ترقی کے ارتقاء کا جائزہ لیتے ہوئے یہاں تک پہنچیں جہاں انسان … Read more