ہاتھی کے دانت کھانے کے اور دکھانے کے اور

پاکستانی ریاست عالمی سامراجی قوتوں کی ایک ایسی آلہ کار ریاست ہے جسے سامراجی قوتوں نے اس کے جنم سے لیکر آج تک جب اور جہاں چاہا،ہمیشہ اپنے سامراجی مقاصد کیلئے بھرپور انداز سے استعمال کیا ہے ۔اس ریاست پر براجمان حکمران طبقے نے بھی سامراجی طاقتوں کے سامنے خود کو استعمال ہونے کیلئے ہمیشہ پیش پیش رکھاہے۔27اپریل1978 کو نور محمد ترکئی کی قیادت میں برپا ہونے والے افغان ثور انقلاب کو سبوتاژ کرنے کی غرض سے امریکہ، سعودی عرب اور پاکستان نے ملکر افغانستان میں ڈالر اور ریال جہاد کا آغاز کردیااور مجاہدین کے نام سے بنیاد پرستوں کو نہ صرف تخلیق کیا گیا بلکہ انہیں امریکی حکمرانوں کی طرف سے یہ بتایا گیا کہ یہ خدا کے ماننے والوں اور نہ ماننے والوں کے درمیان ایک مقدس جنگ ہے۔ سرمائے کے پوجاریوں نے سرمایہ دارانہ نظام کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے ایک مقدس اتحاد قائم کر لیا جس … Read more

فرقہ واریت

تحریر :    انقلابی جدوجہد ضیاء الحق کے مارشل لاء نے سماج میں کئی بربادیاں پھیلائیں۔ قیدیں ٗ کوڑے ٗ پھانسیاں اور جلاوطنیاں تو اس کا معمول تھا۔ سیاست پر پابندیاں لگا کر ایک پورا عمل ہی بند کر دیا گیا۔ جس کے بعد دراصل ریاست کو خوفناک طریقے سے استعمال کیا گیا۔ مارشل لاء کی طوالت کیلئے ریاست کو بہت ہی برے انداز میں استعمال کیاگیا۔ جس سے آج تک نہ صرف پاکستان کے لوگ بلکہ پوری دنیا سے لڑنے کی کوشش کر رہاہے۔ پاکستان بنیادی طور پر ملاؤں کو تمام تر شوروغوغا کے باوجود ایک بہت ہی برداشت والا سماج تھا۔ خصوصی طور پر 1968-69ء کی محنت کشوں کی انقلابی تحریک نے سماج پر بہت گہرے اثرات مرتب کئے تھے۔ سماج میں جہاں فیوڈل سسٹم موجود تھا۔ ذات پات کے گہرے اثرات موجود تھےٗ وہیں پر مذہبی رواداری ٗ آرٹ ٗ کلچر ٗ شاعری ٗ ادب ٗ موسیقی … Read more

ریاسی خلفشار

تحریر :    انقلابی جدوجہد ریاست ہائے اسلامی جمہوریہ پاکستان اس قدرآپاہج ، کمزور ، لاغر ، کرپٹ اور کھوکھلی ہو چکی ہے کہ یہ نہ صرف کوئی بھی چھوٹے سے چھوٹا فیصلہ نافذ کرنے کی اتھارٹی کھو چکی ہے بلکہ اب تو حالت یہ ہے کہ یہ اپنے ہر عمل میں کسی نئے بحران میں داخل ہو جاتی ہے ۔ اس کے اداروں کا آپسی ٹکراؤ شدت اختیار کر جاتا ہے ،اندرونی تضادات کھل کر منظر عام پر آجاتے ہیں ، ریاستی خلفشار اس قدر عیاں ہو جاتا ہے کہ لوگ آمریت میں کسی بڑے طوفان کی پیش گوئیاں شروع کردیتے ہیں اور جمہوری دور میں مارشلاء ان کو ہر ایونٹ پر دکھائی دینے لگتا ہے اور کچھ لوگ ہر معمولی تنازعے پر بھی گھروں اور دفاتر میں بیٹھ کر انقلاب کے پیش منظر پیش کرنا شروع کر دیتے ہیں لیکن یہ بات ضرور ہے کہ ہر طرف ہلچل … Read more

انسانی سماج کی تنظیم و ترقی

تحریر: انقلابی جدوجہد  انسانی سماج کی تشکیل محض کسی حادثے کا نتیجہ نہیں ہے بلکہ بنی نوع انسان نے ایک مسلسل عمل ، مشترکہ جدوجہد ، اجتماعی تجربات اور ٹھوس مادی و معاشی بنیادیں فراہم کرتے ہوئے ایک لمبے تاریخی سفر کے ذریعےیہاں لا کھڑا کیا ہے ۔ انسانی سماج نے جہاں ترقی کی بہت ساری منازل طے کی ہیں وہاں پر انسانی ارتقاء کے بہت سارے مدارج بھی طے کئے ہیں۔ انسان کا اپنے پاؤں پر کھڑا ہو کر اپنے ہاتھوں کو آزاد کر لینا ، انسانی ترقی کی اس معراج تک پہنچنے کے لیے انسانی ہاتھ کی ساخت اور محنت جس نے بعد میں انسانی ذہن کو جلا بخشی اور اس کی جسمانی کمزوری کا بہت بڑا عمل دخل ہے ۔ اگر ہم پتھر کے ابتدائی دور کے آلات دیکھیں اور پھر مختلف انسانی تہذیبوں کی ترقی کے ارتقاء کا جائزہ لیتے ہوئے یہاں تک پہنچیں جہاں انسان … Read more